Surah ad-Dukhan

Irfan-ul-Quran
  • 25پارہ نمبر
  • 59آيات
  • 3رکوع
  • 64ترتيب نزولي
  • 44ترتيب تلاوت
  • مکیسورہ

اس سورہ کا نام الدخان ہے۔ اس میں تین رکوع ہیں۔ یہ سورہ مکی ہے۔ اہل مکہ کی وہی دیرینہ بیماریاں ہیں اور انہیں کا علاج یہاں مقصود ہے۔ کفار کو مخاطب کر کے فرمایا جا رہا ہے کہ تم اپنی دولت اور اثرو رسوخ پر بڑے نازاں ہو اور اپنے حالات پر پوری طرح مطمئن ہو۔ تمہارا یہ خیال ہے کہ تمہیں اصلاح احوال کے لئے کسی نئی دعوت کو قبول کرنے کی ضرورت نہیں۔ تم نے زندگی بسر کرنے کا جو طریقہ اختیار کیا ہے، وہ بالکل سیدھا راستہ ہے، جن نظریات وافکار کی بنیادوں پر تم اپنے اعمال کی دنیا تعمیر کر رہے ہو، وہ بالکل صحیح ہیں، تم نے زندگی بسر کرنے کے جو انداز اختیار کر رکھے ہیں، ان میں کسی اصلاح کی گنجائش نہیں، اس لئے تم نہ آیات الٰہی میں غور کرتے ہو اور نہ اللہ تعالیٰ کے پیارے رسول کی مخلصانہ کوششوں کو بار آور ہونے دیتے ہو۔ یہ گھمنڈ تمہیں مہنگا پڑے گا۔ تم سے پہلے فرعون نے یہی روش اختیار کی تھی اور تم خوب جانتے ہو کہ بآن جاہ وجلال اس کا انجام کتنا عبرتناک ہوا تھا۔

or

اللہ کے نام سے شروع جو نہایت مہربان ہمیشہ رحم فرمانے والا ہے

In the Name of Allah, the Most Compassionate, the Ever-Merciful